جیسے ہی یہ اعلان ہوا کہ مدرسہ اپنے جنریٹر سے سب کے موبائل کو چارج کرانے کی سہولت دینے جارہا ہے، صرف معروف پور کے مسلمان ہی نہیں اطراف کے ہندو بھی جوق درجوق استفادہ کرنے پہنچنے لگے۔

اب گاؤں جاتا ہوں تو دل بیٹھ جاتا ہے۔ وہ بیٹھک کہ جہاں زندگی کو کئی روپ میں دیکھا اب سونی ہوگئی ہے، جن بزرگوں کے دم سے یہ بزم آباد تھی اب وہ خاک کی رداء اوڑھے دو گز زمین میں سورہے ہیں۔ کچھ منچلے ہیں جو اپنی بساط کے مطابق کوشش کررہے ہیں مگر وہ بات کہاں مولوی مدن کی سی

آپ کی مجالس علمی اور حالات حاضرہ پر گفتگو سے عبارت ہوا کرتی تھیں، بہت مہمان نواز اور خاطر مدارات کرتے تھے اور ان لوگوں میں تھے جو دوسروں کو کھلا کر خوشی محسوس کرتے ہیں.

اعظم گڑھ کےدو مقامات پر اس طرح کے معاملے سامنے آئے ہیں ۔بینک اہلکار اور محکمہ زراعت اپنا پلہ جھاڑتے نظر آرہے ہیں

واضح رہے کہ شبانہ اعظمی مشہور شاعر کیفی اعظمی کی بیٹی ہیں اور پھول پور کے پاس مجواں نامی گاؤں کے رہنے والی ہیں۔

محکمہ کا دعویٰ ہے کہ نئے قانون سے مسافروں اور راہ گیروں کو سہولت ہوگی اور ٹریفک کا نظام بھی بہتر ہوگا۔

جن کو سرائے میر تک کا سفر کرنا ہے وہ ٹکٹ بھی سرائے میر تک کا ہی بنوائیں۔ ورنہ 6 مہنہ بعد یہ سہولت ختم ہوسکتی ہے۔

6 مہینہ بعد وزارت ریلوے اس کا جائزہ لے گی اور سرائے میر تک کا ریزرویشن کرانے والے مسافر کم ہوں گے یا کوئی اور معقول وجہ ہوگی تو اس فیصلہ کو واپس بھی لے سکتی ہے۔

اس مٹنگ کا مقصد ضلع کے تاجروں کے مسائل کو اٹھانا اور ان کو حل کرنے کی کوشش کرنا تھا

عارف بدرصوم و صلاۃ کے پابند ایک مذہبی شخص ہیں جو اس وقت سیمی سے روابط کے جرم میں تقریبا دس سال سے اپنے ناکردہ گناہوں کی سزا کاٹ رہے ہیں،

HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2019.