اب سوال یہ ہیکہ جناب امین صاحب محمد ساجد کے اہلِ خانہ کی احساسِ محرومی کا صلہ کون دے گا۔؟حکومت یاپھر دہلی پولس۔

روز سرائے میر سے سینکڑوں نوجوانوں کا ہجوم ایگزیکٹیو انجینئر پھولپور کے پروگرام میں ان سے ملنے کے لئے پہنچے اور مسئلہ کو حل کرنے کی مانگ کی

۔اللہ تعاق لٰی سے رجوع کریں خشوع و خضوع کے ساتھ دعائیں کریں

حکومت ہر صفائی ملازم کو 21900 روپئے تنخواہ دیتی ہے اور ان کا کام یہ واضح طور پر ہے کہ وہ راستوں ، نالیوں اور عوامی جگہوں کی روزآنہ صفائی کریں۔ لیکن گاؤں پردھان ' اے ڈی او اور دوسرے افسران کی ملی بھگت سے صفائی کا کام مشکل سے کسی گاؤں میں روزآنہ انجام پاتا ہوگا۔

مدرسہ کے اساتذہ اور طلبہ کے علاوہ قرب جوار کے لوگوں نے بھی پورے حوصلہ اور جذبہ کے ساتھ کپڑا، غلہ اور نقد روپئے لا کر جمع کئے۔

سموسہ کھانے کا دل تھا، سالوں سے سعودی عرب کا کبشہ “کھپسا” کھا کر زبان زنگ آلود ہو چکی تھی وہاں انڈیا کی طرح کباب ، سموسے ، پکوڑے مشکل سے ہی ملتے ہیں اگر ملتے بھی ہیں تو سموسے میں اوم کار بھیا والا ذائقہ نہیں ہوتا سیدھے مویشی خانہ پر اومکار بھیا کی دوکان پر پہونچا تو سموسہ ختم تھا لیکن

اطلاع کے مطابق تدفین کا عمل کل دوبجے دوپہر میں مولانا ایوب صاحب کے آبائی گاؤں کنورہ گہنی میں انجام پاۓ گا۔

اس کے تحت سراۓ میر ، مبارک پور ، بردہ ، اہرولہ ، جہاناگنج ، روناپار ، پھولپور ،پوئی ، نظام آباد ، گمبھیرپور اور اترولیہ تھانوں میں پھیربدل کے ساتھ ساتھ کرائم برانچ اور اینٹی ہیومن ٹریفکنگ ڈپارٹمنٹ وغیرہ میں بھی تبدیلی کی گئی ہے۔

قابل ذکر بات ہے کہ گلاب یادو یہ کام آج سے یا اس سال سے نہیں کررہے ہیں بلکہ اس کام کی شروعات ان کے والد نے 1975 میں کی تھی جس وراثت کو وہ آج بھی بخوبی نبھا رہے ہیں۔

اس طوفانی آندھی اور بارش سے موسمی پھل آم پر کافی اثر پڑا ہے ۔ بڑی مقدار میں آم کے پھل گر گئے ہیں۔

HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2017.