نوجوان پیدائشی طور پر گونگا اور بہرہ تھا۔

چوری کی خبر جب بازار والوں کو ملی تو لوگوں نے دوشنبہ کی صبح نوناری چوک پر جام لگا دیا۔

۔ آگ کی لپٹ سے ٹرک پر بھرے سلنڈر میں بھی آگ لگ گئی۔ جب تک کہ لوگ کچھ سمجھ پاتے سلنڈر دھماکے کے ساتھ پھٹنے لگے ۔

چار بھائی بہنوں میں سنجنا سب سے چھوٹی تھی ۔ سنجنا کی موت کے بعد گھر میں کہرام مچا ہوا ہے۔ لوگوں نے غصہ میں سڑک جام کردیا ۔ پولیس نے موقع پر پہنچ کر لوگوں کو سمجھایا اور جام ختم کرایا۔

سڑکوں پر گھوم رہے آوارہ سانڈوں کی وجہ سے لوگوں کو کافی پریشانیاں ہورہی ہیں۔ سانڈ سڑکوں پر سینا تانے پوری مستی کے ساتھ گھومتے رہتےہیں۔ جونپور کے عباس احمد پر ہوئے سانڈ کے حملہ سے حالت نازک ہے۔

، جس وقت وہ پہیا کو نکالنے کی کوشش کررہے تھے اسی دوران ٹرکٹر پلٹ گیا ،

اطلاع کے مطابق واقعہ کی خبر ملتے ہی موقع پر پولیس پہنچ گئی اور مرنے والوں کو پک اپ میں کر کے تھانہ لے آئی اور زخمیوں کو ایمبولینس کے زریعہ ضلع اسپتال بھیج دیا ۔

روہت 14 ہزار روپیہ کا اسمارٹ فون بچانے میں ناکام رہا کیوں کہ روہت کا ہاتھ نکالنے کے دوران فون نالہ میں گر گیا تھا۔

اہل خانہ کی طرف سے دی گئی تحریر پر پولیس نے تین لوگوں کے خلاف ایف آئی آر درج کی ہے اور تینوں ملزمین کو پولیس نے گرفتار کر لیاہے۔

حادثہ میں جان کھونے والی لڑکی کا نام شریعت رائے تھا جو سی بی ایس سی بورڈ کی اگرہویں جماعت کی طالبہ تھی۔

HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2018.