دلچسپ بات یہ ہے کہ یہ قرآن ایک چور نے مدرسہ میں لا کر جمع کیا تھا۔ ہندی اخبار پتریکا کے مطابق اس قرآن کے بارے میں مدرسہ کے ناظم عبدالمنان چشتی بتاتے ہیں کہ لگ بھگ 57 سال پہلے کی با

ملی ماڈل اسکول کے علامہ اقبال ہال میں ہوۓ انتخابی عمل کی نسیم الرحمان فلاحی کی قرآن پاک کی تلاوت سے ہوئی ۔ بعد ازاں انجمن کے سکریٹری انعام اللہ فلاحی نے تذکیر کی جس میں انجمن کے اغراض و مقاصد پر روشنی ڈالی۔ صدارتی گفتگومرکزی انجمن کے صدر

ہم نے یہ محسوس کیا کہ انھیں اپنے مذہب کے بارے کچھ معلوم نہیں ہے اور نہ ہی وہ اپنے مذہب کے تعلق سے کچھ جاننا چاہتے ہیں ۔اس کے بجائے اسلام کے بارے میں وہ بہت کچھ جاننا چاہتے ہیں ۔یہ صرف پروپگنڈہ کی وجہ سے ہوتا ہے ۔

واضح ہو کہ پروفیسر اعظمی کے ایک دوسرے بھائی شاہد پرویز اعظمی دہلی میں مولانا آزاد کے ریجنل ڈائریکٹر کے منصب پر بھی سرفراز ہیں۔

توصیفی سند کے علاوہ مبلغ 15 ہزار روپئے نقد ایوارڈ میں شامل ہے جس کو ڈاکٹر عریل نے دارالمصنفین کی نذر کرنے کو فیصلہ کیا ہے۔ اس اقدام سے ان کا مقصد لوگوں کو دارالمصنفین کی مالی تعاون کی طرف توجہ دلانا مقصود ہے

کیمپ میں الفلاح استپال کے عملہ کے علاوہ جامعۃ الفلاح کے طلبہ نے بھی حصہ لیا

مولانا کی لکھی ہوئی عربی زبان سیکھنے کی ابتدائی کتاب القراۃالعربیہ اس وقت مدرسۃ الاصلاح سمیت کئی اداروں میں داخل نصاب ہے۔

نمائندگان کے اجلاس کا انعقاد جامعۃ الفلاح کے کیمپس میں ہوا جس میں نئے صدر کے طور پر مشرف حسین کو باہمی اتفاق سے صدر کے عہدہ کے لئے

اس سمینار میں ملک کے مختلف مقامات سے اسلامی قانون اور فقہ کے ماہرین کی شرک متوقع ہے۔

اس موقع پر بارک کاپڑی نے ایک تشجیعی لیکچر شعبہ نسواں کی طالبات کے سامنے بھی پیش کیا جس

HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2017.