سرائے میز بازار میں بالکل سناٹا چھایا رہا اور لوگوں نے احتجاجا اپنی دوکانیں بند رکھیں

جب لوگ سلجھے ھوئے نھیں ھوتے ھیں تو بڑی دشواری ھوتی ھے، میرے علم میں کئی ایسے معاملات ھیں، جن میں لڑکیاں خلع چاہتی ھیں اور انھیں معلق بنا کر چھوڑ دیا گیا ھے

وجہ ماہل موڑ پر پلیا کا دھنس جانا ہے اور پانی کی نکاسی نہ ہو پانا ہے۔ یہی وجہ ہے کہ ہلکی بارش سے بھی موڑ پر پانی جمع ہوجاتا ہے اور لوگوں کو آنے جانے

مودی اور یوگی کے بارے میں اپنی راۓ کا اظہار کرتے ہوۓ مولانا نے کہا کہ ہم صرف ایک اصول جانتے ہیں جو بھی ہمارے ساتھ اچھا کرے گا ہم اس کا ساتھ دیں گے چاہے وہ مودی ہوں یا یوگی۔

گاؤں کے لوگوں نے ضلع مجسڑیٹ اور ایس پی سے اپنی مسئلہ کی شکایت کی اور اس معاملہ میں جلد از جلد انصاف کی مانگ بھی کی۔

واضح رہے کہ اعظم گڑھ شہر میں زنانہ اسپتال سے لیکر مین چوک ، پرانی کوتوالی ، تکیہ محلہ ہوتے ہوۓ پہاڑ پور تراہے تک سڑک کے دونوں طرف بے لوگ بے ترتیب انداز میں گاڑیاں کھڑی کردیتے ہیں جس کی وجہ سے آۓ دن جام لگا رہتا ہے۔

ڈی ایم نے امین ، قانون گو اور لیکھ پالوں کے کاموں کا جائزہ لیا اور انہیں ضروری ہدایات دیں تاکہ وہ اپنے کام کو اچھے طریقے سے انجام دے سکیں اور کام نے کرنے پر نائب ڈی ایم کو ان کے خلاف کارروائی کرنے کا حکم بھی دیا۔

مولانا کے اس بیان کے بعد جہاں سیاسی ماحول میں گرمی آگئی وہیں پولیس اور انتظامیہ کے ذریعہ مولانا پر مقتول کے اہل خانہ کو بھڑکانے کے الزام میں اعلی افسروں کے ذریعہ ایف آئی آر بھی درج کی گئی۔

اس علاقے کے لوگوں نے بجلی کی پریشانی کو دور کرنے ، یہاں کی ساڑیوں کو امپورٹ کرنے اور اچھے اسکول کھولنے اور روزگار کے مواقع میہا کراۓ جانے جیسی

طلبہ و طالبات یہاں اچھے اسکول اور معیاری تعلیم سے محروم ہیں تونوجوان نوکریوں کی کمی سے پریشان ہیں

HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2017.