روز سرائے میر سے سینکڑوں نوجوانوں کا ہجوم ایگزیکٹیو انجینئر پھولپور کے پروگرام میں ان سے ملنے کے لئے پہنچے اور مسئلہ کو حل کرنے کی مانگ کی

۔اللہ تعاق لٰی سے رجوع کریں خشوع و خضوع کے ساتھ دعائیں کریں

واضح رہے کہ ماہ جون میں عدالت نے ابوسلیم و دیگر کو دھماکوں کے مجرم قرار دیا تھا

سموسہ کھانے کا دل تھا، سالوں سے سعودی عرب کا کبشہ “کھپسا” کھا کر زبان زنگ آلود ہو چکی تھی وہاں انڈیا کی طرح کباب ، سموسے ، پکوڑے مشکل سے ہی ملتے ہیں اگر ملتے بھی ہیں تو سموسے میں اوم کار بھیا والا ذائقہ نہیں ہوتا سیدھے مویشی خانہ پر اومکار بھیا کی دوکان پر پہونچا تو سموسہ ختم تھا لیکن

جس سے محسن (12) ولد لڈڈن اور اشرف (11) ولد انوار پیڑ کے نیچے دب گئے ، بچوں کی چیخ پکار کو سن کر لوگوں نے فورا نکالا اور انہیں ہسپتال لے گئے، لیکن راستے میں ہی ان کی موت ہو گئی۔

واقعہ کی اطلاع ملنے پر پولس وہاں پہنچی اور سلنڈر کو اپنے قبضے میں لیتے ہو ئے وہاں پر موجو د عوام کو کسی بڑے حادثہ سے ہونے کی یقین دہانی کرائی، جبکہ گیس بھرنے والا شخص موقع سے فرار ہوگیا۔

لوگوں کو خطاب کرتے ہوئے کلیم جامعی نے کہا کہ ملک کی جمہوریت کمزور ہوتی جارہی ہے۔ اقتدار کے لئے فرقہ واریت کا زہر گھولا جارہا ہے۔

واقعہ مقصودیہ گاؤں کے رہنے والے آرسٹ نومی عرف آشیس یادو کا ہے جس نے بنارس ہندو یونیورسٹی سے گریجویشن مکمل کرلینے کے بعد ماسٹرس کی پڑھائی کے لئے دہلی یونیورسٹی میں داخلہ لینا چاہ رہا تھا اور اس کی سیٹ کنفرم بھی ہوچکی تھی۔

اطلاع کے مطابق تدفین کا عمل کل دوبجے دوپہر میں مولانا ایوب صاحب کے آبائی گاؤں کنورہ گہنی میں انجام پاۓ گا۔

ابوسلیم کا تعلق اعظم گڑھ کے سرائے میر قصبے سے ہے جنہیں 2005میں پرتگال سے گرفتار کیا گیا تھا۔

HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2017.