؞   تبلیغی جماعت دہلی مرکز کے حالات کی ذمہ دار پولس اور سرکار: ابو عاصم اعظمی
۳۱ مارچ/۲۰۲۰ کو پوسٹ کیا گیا
مہاراشٹر /دہلی(حوصلہ نیوز) دو دن سے تبلیغی جماعت کا صدر دفتر مرکز نظام الدین میڈیا کی سرخی بنا ہوا ہے۔ سرکار سے لے کر عام اہل کار اور میڈیا تک تبلیغی جماعت کے مرکز کو کرونا وائرس کی جڑ ثابت کرنے اور بھارت میں ہوئی اموات کا کہیں نہ کہیں ذمہ دار ٹھہرانے میں جٹی ہوئی ہے۔ دہلی کے وزیر اعلیٰ اروند کیجریوال نے دہلی پولیس کو یہ ہدایت دی تھی کہ وہ مولانا سعد صاحب پر ایف آئی آر درج کرے۔ اس لیے کہ انہوں نے قانون کی خلاف ورزی کی ہے۔
مہاراشٹر سماجوادی پارٹی کے صدر ابو عاصم اعظمی نے سرکار اور پولس کو قصوروار ٹھہراتے ہوئے کہا کہ جب مولانا یوسف صاحب نے پولس کو اس بات کی اطلاع دے دی تھی تو کیوں پولس اور سرکار وہاں سے لوگوں کو نکالنے میں لاپرواہی کررہی تھی۔ انہوں نے مزید کہا کہ تبلیغی جماعت پوری دنیا میں امن و شانتی کا پیغام دیتی ہے۔ اس لیے ان کو کچھ برا بھلا نہیں کہنا چاہیے۔ انہوں نے مزید کہا کہ پورے ملک میں لاک ڈاؤن ہے۔ غریبوں اور مزدوروں کے لیے کھانے، رہنے کسی چیز کا انتظام نہیں ہے۔ اگر وہ گھر جانا چاہ رہے ہیں تو ان کے لیے سواری کا بھی انتظام نہیں ہے۔ سرکار یہ تو کہہ رہی ہے کہ عوام قانون کی خلاف ورزی کررہے ہیں۔ لکین انہیں بنیادی ضروریات سے بھی محروم رکھا گیا ہے۔
واضح رہے کہ تبلیغی جماعت کے مرکز نظام الدین میں کچھ دونوں پہلے سے ملک اور بیرون ملک کے جماعت کے ارکان کا اجتماع ہورہا تھا 22 تاریخ کے کرفیو کھلنے کے بعد 23تاریخ کو بہت سے لوگ اپنے اپنے گھروں کو چلے گئے تھے۔ کچھ لوگ جو بیرون ملک سے آئے تھے وہ مرکز ہی میں تھے جس کی اطلاع مرکز انتطامیہ نے پولس کو دی تھی اور ان سے ان لوگوں کو گھر پہنچانے کی درخواست کی تھی۔

3 لائك

0 پسندیدہ

0 مزہ آگیا

0 كيا خوب

1 افسوس

1 غصہ


 
؞ ہم سے رابطہ کریں

تبصرہ / Comment
آپ کا نام
آپ کا تبصرہ
کود نقل کريں
؞   قارئین کے تبصرے
تازہ ترین
سیاست
تعلیم
گاؤں سماج
HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2020.