؞   سرائے میر ریلوے اسٹیشن پر مزید ٹرینوں کے رکنے کی مانگ
۱۵ مارچ/۲۰۲۰ کو پوسٹ کیا گیا
سرائے میر (حوصلہ نیوز) ریلوے سنگھرش سمیتی سمیت قصبہ سرائے میر واطراف کے لوگوں نے مئو آنند وہار اور تاپتی گنگا ایکسپریس کو سرائے میر ریلوے اسٹیشن پر روکنے کی مانگ کی ہے۔
مئو سے آنند وہار ٹریمونل دہلی تک چلنے والی (15025/26) مئو آنند وہار ایکسپریس اور چھپرا سے سورت تک چلنے والی (19045/46) تاپتی گنگا ایکسپریس کو سرائے میر ریلوے اسٹیشن پر روکنے کی مانگ لوگ بہت پہلے سے کررہے ہیں لیکن ان کی مانگ پوری نہیں ہورہی ہے۔
ریلوئے سنگھرش سمیتی نے دوبارہ ٹویٹ کے ذریعہ وزیر ریلوے اور نارتھن ریلوے سے مئو آنند وہار اور تاپتی گنگا ایکسپریس کے سرائے میر ریلوے اسٹیشن پر روکنے کی بات کی لیکن ریلوے کی طرف سے کوئی جواب نہیں ملا۔
ریلوے سنگھرش سمیتی سرائے میر کے بانی عمیر منظر نے حوصلہ نیوز سے بات کرتے ہوئے کہا کہ ہم اور مقامی لوگ بہت دنوں سے ریلوے سے یہ مانگ کررہے ہیں کہ ان دونوں ٹرینوں کوسرائے میر ریلوے اسٹیشن پر روکا جائے لیکن ابھی تک ریلوے کی طرف سے کوئی جواب نہیں آیا ہے۔ انہوں نے مزید کہا کہ کیوں ریلوے سرائے میر اسٹیشن کے ساتھ اندیکھی کررہا ہے۔ جب کہ یہاں سے ہر ماہ 55 سے 60 لاکھ تک کی کمائی ریلوے کو ہوتی ہے۔
واضح رہے کہ قصبہ سرائے اپنے آس پاس کے تقریباً 50 سے 60 گاؤں کو جوڑتا ہے اور سرائے کا ریلوے اسٹیشن اعظم گڑھ اور شاہ گنج کے درمیان میں دوری کے لحاظ سے برابر ہے جہاں سے کپڑے کے چھوٹے بڑے تاجر اکثرسورت اور دہلی کا سفر کرتے ہیں جنہیں ٹرین نا رکنے کی وجہ سے پریشانی کا سامنا کرنا پڑتا ہے۔

4 لائك

0 پسندیدہ

0 مزہ آگیا

2 كيا خوب

0 افسوس

0 غصہ


 
؞ ہم سے رابطہ کریں

تبصرہ / Comment
آپ کا نام
آپ کا تبصرہ
کود نقل کريں
؞   قارئین کے تبصرے
تازہ ترین
سیاست
تعلیم
گاؤں سماج
HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2020.