؞   طارق قاسمی کی جان کو خطرہ، وکیل کا الزام
۲۶ اگست/۲۰۱۸ کو پوسٹ کیا گیا
لکھنؤ(حوصلہ نیوز): لکھنؤ جیل میں قید حکیم طارق قاسمی کے وکیل کا کہنا ہے کہ ان کو جیل کے اندر قتل کیے جانے کا اندیشہ ہے۔ حکیم طارق قاسمی کو سال 2007 میں لکھنؤ اور فیض آباد کی عدالتوں میں بم دھماکہ کرنے کے الزام میں گرفتار کیا گیا تھااورگزشتہ دنوں لکھنؤ کی ایک خصوصی عدالت نے انہیں مجرم قراردیا تھا جس کے بارے میں سزا کا تعین دوشنبہ کو کیا جائے گا۔
حکیم طارق قاسمی رانی سرائے کے پاس سمو پور گاؤں کے رہنے والے ہیں۔
طارق قاسمی کے وکیل محمد شعیب نےاتوار کو اترپردیش کے چیف سکریٹری ، قومی حقوق انسانی کمیشن اور جیل حکام کو لکھے اپنے خط میں اس اندیشے کا اظہار کیا ہے کہ کچھ لوگ حکیم طارق قاسمی کے قتل کامنصوبہ رکھتے ہیں لہذا ان کی سلامتی کو یقینی بنایا جانا بہت ضروری ہے۔
حوصلہ نیوز سے بات کرتے ہوئے شعیب نے کہا کہ انہیں یہ اطلاع ملی ہے کہ کچھ لوگ جیل کے اندر حکیم طارق کا گلا گھونٹ کر قتل کرنا چاہتے ہیں اور بعد میں ان کو پھانسی پر لٹکاکر یہ کہانی بنانا چاہ رہے ہیں کہ مقدمہ میں سزا سننے کے بعد قیدی نے خودکشی کرلی۔
واضح رہے کہ سال 2013 میں اس مقدمہ کے ایک ملزم خالد مجاہد کی پراسرار حالت میں موت ہوچکی ہے۔

0 لائك

0 پسندیدہ

0 مزہ آگیا

2 كيا خوب

28 افسوس

15 غصہ


 
؞ ہم سے رابطہ کریں

تبصرہ / Comment
آپ کا نام
آپ کا تبصرہ
کود نقل کريں
؞   قارئین کے تبصرے
تازہ ترین
سیاست
تعلیم
گاؤں سماج
HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2018.