؞   عید ملن جیسے پروگرام آپسی بھائی چارے کو تقویت دیتے ہیں: طاہر مدنی
۲۲ جون/۲۰۱۸ کو پوسٹ کیا گیا
چاند پٹی (ابوزید/حوصلہ نیوز): سنیچر کی شب چاند پٹی گاؤں میں ایک عید ملن کا پروگرام منعقد ہوا ۔ مہمان خصوصی رام شکل پٹیل، بلاک پرمکھ ، پولیس افسران ، مولانا طاہر مدنی کے علاوہ ہریجن بستی کے افراد نے شرکت کی۔ چاند پٹی کے لوگوں نے گاؤں کے پردھان کی قیادت میں مہمانوں کا گرمجوشی سے استقبال کیا اور ضیافت کی ۔
مولانا عبد العظیم فلاحی نے اپنے گاؤں چاند پٹی میں سنیچر کی شب ایک عید ملن پروگرام رکھا جس میں بلاک پرمکھ ، پولیس افسران، مولانا طاہر مدنی کے علاوہ ہریجن بستی کے افراد اور گاؤں کے کافی لوگوں نے شرکت کی ۔ میزبانوں نے جہاں مہمانوں کا گرمجوشی سے استقبال کیا وہیں ان کی خاطر خواہ ضیافت بھی کی۔
مولانا طاہر مدنی نے اپنے احساسات کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ گاؤں کی صاف ستھری ہوا، شب کا سہانا موسم اور دیہات کے سادہ لوگوں کی اپنائیت بیک وقت فائیو اسٹار ہوٹلوں کو ماند دے رہی تھیں۔
بلا ک پرمکھ اور رام شکل پٹیل نے اپنے تاثرات میں بے انتہا خوشی کا اظہار کرتے ہوئے کہاکہ اس طرح کے پروگرام ہمارے بھائی چارہ کو مضبوط کرتے ہیں ۔ ہم اپنے مسلمان بھائیوں کو دل کی گہرائیوں سے بدھائی دیتے ہیں۔
اس موقع پر مولانا طاہر مدنی نے اپنے تاثرات کا اظہار کرتے ہوئے کہا کہ روزہ ہمارے اندر اپنے آپ کو کنٹرول کرنے کی صلاحیت پیدا کرتا ہے اور یہ زندگی میں کامیابی کے لئے نہایت ہی مفید ہے۔ روزہ ہمارے اندر کھانا پانی اور دوسری نعمتوں کی قدر و قیمت کا احساس دلاتا ہے ، عام دنوں میں اس کا احساس نہیں ہوپاتا لیکن روزہ رکھ کر بھوک پیاس برداشت کرکے جب شام میں ہم افطار کرتے ہیں تو یہ احساس ہوتا ہے کہ پانی کتنی بڑی نعمت ہے ۔
مولانا نے مزید کہا کہ روزہ ہمارے اندر سماج کے کمزور طبقات کے لئے ہمدردی اور محبت کا جذبہ پیدا کرتا ہے ۔ آدمی جب خود بھوک اور پیاس کے تجربے سے گزرتا ہے تو غریبوں کی تکلیف کا احساس ہوتا ہے اور ان کی مدد کے لئے اس کے اندر حوصلہ پیدا ہوتا ہے۔ اسی لئے رمضان میں لوگوں کی کافی مدد کی جاتی ہے۔
مولانا نے بتایا کہ روزہ ہمارے اندر اتحاد اور یکسانیت کے تصور کو پیدا کرتا ہے ۔ ایک ساتھ سحری ، ایک ساتھ افطاری، ایک ساتھ عبادت ۔۔۔ اس سے یہ پیغام ملتا ہے کہ ہم سب برابر ہیں اور امیر غریب میں کوئی فرق نہیں ہے۔
مولانا نے عید کے بارے میں بیاں کرتے ہوئے کہا کہ ایک مہنہ اللہ کی مہربانی سے ہم جو عبادت کرتےہیں اس کا شکر ادا کرنے کے لئے ہم عید گاہ میں اکٹھا ہوکر دو رکعت پڑھتے ہیں اور دعا کرتے ہیں کہ اے اللہ تیرا احسان ہے کہ ہم روزہ رکھا اور نماز پڑھی ، قرآن پڑھا، صدقہ و خیرات کیا تو اسے قبول کرلے، ہم تیری تسبیح بیان کرتے ہیں اور تجھی سے مدد چاہتے ہیں کہ پوری زندگی سیدھے راستےپر چلا اور انسانوں کی خدمت کرنے کی توفیق دے۔
مولانا نے مزید کہا کہ اس طرح کے مواقع اسلامی تعلیمات کے تعارف تعارف کا موقع فراہم کرتےہیں اور آپسی بھائی چارے کو تقویت دیتے ہیں۔
آخیرمیں مولانا عبد العظیم فلاحی صاحب نے مہمانوں کا شکریہ ادا کیا ۔

0 لائك

3 پسندیدہ

0 مزہ آگیا

0 كيا خوب

0 افسوس

0 غصہ


 
؞ ہم سے رابطہ کریں

تبصرہ / Comment
آپ کا نام
آپ کا تبصرہ
کود نقل کريں
؞   قارئین کے تبصرے
تازہ ترین
سیاست
تعلیم
گاؤں سماج
HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2018.