؞   عید کے چاند کی تصدیق ہوگئی ، لوگ توڑ دیں روزہ۔ طاہر مدنی
۱۴ جون/۲۰۱۸ کو پوسٹ کیا گیا
اعظم گڈھ (حوصلہ نیوز): مولانا محمد طاہر مدنی صاحب نے صبح تقریبا 9 بجے اپنے ایک تحریر بیان میں کہا ہے کہ شوال کے چاند کی تصدیق ہوگئی ہے لہذا اب روزہ رکھنا صحیح نہیں ہے۔
مولانا نے بتایا کہ جمعہ کی رات تقریبا ایک بجے مدرسہ احیاء العلوم مبارکپور سے رویت ہلال کی تصدیق ہوگئی تھی اور یہ اعلان کردیا گیا تھا کہ جمعہ کو عید ہے۔ لہذا ایک وفد جس میں مولانا طاہر مدنی ، مولانا عامر رشادی، مولانا محمد عمران فلاحی ، مفتی وسیم احمد قاسمی ، ڈاکٹر محمد عمیر اور طلحہ عامر شامل تھے لوگوں نے سب سے پہلے لوگ مفتی محمد امین صاحب سے ملاقات کی انہوں نے بتایا کہ دیر رات تک گواہیاں متعدد افراد کی مکمل ہوئیں اور شرعی شرائط کی تکمیل ہوگئی تو اعلان کروا دیا گیا۔ طاہر مدنی صاحب مزید لکھتے ہیں کہ اس کے بعد ہم لوگ براہ راست تصدیق کیلئے نوادہ محلے گئے اور چاند دیکھنے والے تین افراد سے براہ راست گواہی لی، انہوں نے صاف طور پر رویت کی گواہی دی اور یہاں تک کہا کہ اگر ہم جھوٹ بول رہے ہیں تو اللہ کی لعنت ہو ہم پر۔ ایک درجن سے زائد افراد نے یہاں چاند دیکھا اور سب لوگ عید کی تیاریوں میں خوشی خوشی مصروف تھے۔
طاہر صاحب کا کہنا کہ اس علاقے میں مطلع ابرآلود تھا اس لیے شرعی لحاظ سے دو معتبر گواہ ثبوت رویت کیلئے کافی ہیں جب کہ یہاں اچھے خاصے افراد نے دیکھا ہے جس سے ثبوت ہلال شوال کی شرائط پوری ہوجاتی ہیں، اسی لیے مفتی محمد امین صاحب نے اعلان رات میں کرادیا تھا۔
مولانا کا کہنا ہےکہ ہمارا وفد اس نتیجے پر پہنچا کہ جب شہادت کی شرائط مکمل ہیں اور ہم نے تصدیق کرلی ہے، اس لیے شہادت نہ ماننے کا کوئی جواز نہیں ہے، رویت ثابت ہوچکی ہے، آج شوال کی پہلی تاریخ ہے، اس لیے آج روزہ ہرگز نہ رکھا جائے، البتہ تاخیر کی وجہ سے جہاں دشواری ہو، وہاں نماز عید کل پڑھ لی جائے۔
واضح رہے کہ جمعہ کی رات رویت ہلال کی خبر مبارکپور کے علاوہ گجرات ، کیرلا اور مہاراشٹر کے کچھ علاقوں سے ہی آگئی تھی۔
مولانا طاہر مدنی صاحب اپنے تحریر بیان میں کہتے ہیں کہ اس پورے پس منظر میں پورے وثوق و اعتماد اور احساس ذمہ داری کے ساتھ وفد یہ اعلان کرتا ہے کہ آج شوال کی پہلی تاریخ ہے. آج روزہ ہرگز نہ رکھا جائے۔
مدرسہ بیت العلوم کے ناظم مفتی احمد اللہ صاحب نے حوصلہ نیوز کو بتایا کہ ہمارے یہاں رویت ہلال کی کوئی خبر نہیں ہے۔ علاقے کے لوگ روزہ سے ہیں ۔ مفتی صاحب کا مزید کہنا ہے کہ رات تقریبا 5 بجے تک میں مولانا رشادی صاحب سے کہتا رہا کہ رویت ہلال کی تصدیق کے اس گاؤں میں جایا جائے جہاں چاند دیکھا گیا ہے لیکن رشادی صاحب تیار نہیں ہوئے اور صبح یہ چلے گئے۔
مبارکپور کے مولانا قمر الزماں صاحب نے فون پر بتایا کہ صرف انہیں علاقوں میں لوگوں نے عید منائی ہے جس علاقے میں یہ مدرسہ ہے اور جہاں سے اس کا اعلان ہوا ہے ۔ مولانا کا مزید کہنا ہے کہ اس علاقے میں مختلف مکتبہ فکر لوگ رہتے ہیں اس وجہ سے اکثر ایسا ہوتا رہتا ہے ۔ آج اکثریت روزہ سے ہے ۔
مرزا پور کے انجینئر غفران رفیقی کا کہنا ہے اگر اکثریت نے چاند نہیں دیکھا ہے تو اس طرح سے اعلان کرنا درست نہیں ہے جس سے لوگوں کو دشواری کا سامنا کرنا ہو۔

7 لائك

3 پسندیدہ

0 مزہ آگیا

0 كيا خوب

2 افسوس

2 غصہ


 
؞ ہم سے رابطہ کریں

تبصرہ / Comment
آپ کا نام
آپ کا تبصرہ
کود نقل کريں
؞   قارئین کے تبصرے
تازہ ترین
سیاست
تعلیم
گاؤں سماج
HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2018.