؞   اے میرے وطن کے لوگو! ایک پردیسی کا روزہ
۱۴ جون/۲۰۱۸ کو پوسٹ کیا گیا
تحریر : محمد زاہد اعظمی ٭
!! السلام علکم: ورحمتہ اللہ اے مرلے وطن کے لوگو
اس ماہ مبارک مںی اپنی نیک دعاؤں مںک ہم پردیودسں کو بھی یاد رکھنا کہ ہم نے بھی کبھی آپ کی طرح ماہ رمضان اپنے گھر والوں کے ساتھ گذارا ہے۔ سحری بھی ساتھ مںں کھائی افطار بھی ساتھ کی ہے ۔ اور تراویح کبھی خود پڑھائی تو کبھی کسی کے پچھے بھی پڑھی ہے۔ آج ہم آپ سے دور اپنے پانرے وطن ہندوستان سے دور پردیس مںد مسافرت کی زندگی گزار رہے ہں ۔ لکنھ افطار کرتے وقت شربت کے ہر گھونٹ پر آپ کی یاد آئی ۔ افطار سے تھوڑا پہلے بچوں کا باہر دوڑ دوڑ کر آذان دینا بھی یاد آیا ۔ بچوں کا پکوڑی اور گُل گُلے کلئےے لڑنا بھی یاد آیا۔ افطار سے تھوڑا پہلے لوگوں کو مؤذن صاحب سے وقت پوچھنا بھی یاد آیا۔ آٹھ رکعت تراویح پڑھ کر واپس کام پر جاتے وقت وہ بس رکعت تراویح کا پر نور منظر آنکھوں کو دھندلا کر گاد۔ یاد آیا بہت کچھ یاد آیا ۔ کچھ اپنی کمی اور آپ کی کوتاہاپں بھی یاد آئںآ۔ ہم آپ کو بھولے نہں۔ ہںب۔ لکنر دل کی کتےا کو لفظوں مںا ڈھال دینا یہ کم سے کم مرتے بس مںھ تو نہں کوھں کہ مںو کوئی مضمون نگارنہںپ ہوں بس وہی لکھتا ہوں جو مرچے دل کی آواز ہوتی ہے اور جو مںا محسوس کرتا ہوں۔
خر آج آپ کا دوسرااور مرتا تسرآا روزہ ہوگا ۔۔ افطار کے وقت ہمںد دعاؤں مںں یاد کر لناھ ۔ یاد کر لناا ان ماؤں اور بہنوں کو بھی جو اپنے وطن شام و عراق سے ہجرت کرنے پر مجبور ہںم۔ یاد کرنا ان مجاہدین کو بھی جو اسلام کی سر بلند کلئے ہاتھوں مںط تلوار اور سر پر کفن باندھ کر اس رمضان مںں بھی لڑ رہے ہںی۔ یاد کرنا فلسطیوں ماؤں اور بہنوں پر کئے جا رہے اسرائیوس ظلم کو اور انکے حق مںپ بھی دعا کرنا کہ اللہ انہںا فتح سے ہمکنا ر کرے۔ آمن۔
مرنے وطن کے غوار لوگو!! ہو سکتا ہے کہ جب تک مرنی تحریر آپ تک پہنچے آپ اپنی پہلی افطاری کر کے شکم سرن ہو چکے ہوں لکنت چلںو کوئی بات نہںر ابھی دوسری سحریاںاور افطاریاں تو باقی ہںؤ ۔ جب آپ دستر خوان پر بٹھنا تو ذرا ایک نظر دستر خوان پر بھی ڈال لنا کہ آپکے دستر خوان پر انواع و اقسام کے مواے اور کھانے پڑے ہں جس مںے سے کچھ کھائے جائںس گے اور کچھ پھنک دئے جائںپ گے لکنا ان سب چزپوں کے بچھ ذرا اپنے پاس پڑوس مںر بھی نظریں دوڑا لناگ کوںں کہ بہت سے دستر خوان ان سب سے محروم ہونگے۔
گھبرائںر نہںذ مںئ آپ کا حق چھنی کر انکو دینے کی بات نہں کر رہا ہوں کووں کہ یہ تو صرف آپ کا حق ہے آپ کے بچوں کا حق ہے۔ لکنے صرف ایک بار ہاں صرف ایک بار آخرت کو بھی یاد کر لناو ۔ اور خود سے سوال کر نا کہ جو آپ کر رہے ہںے کا یہ صحح ہے؟ ہوسکتا ہے آپ کو اس کا احساس نہ ہو لکن ہمں اس بات کا احساس ضرور ہے کو نکہ ہم اپنے وطن سے دور ہںر ہمںا چھوٹی چھوٹی باتں سوچنے پر مجبور کرتی ہںخ ہمںح آپ سے پاںر بھی ہے اسی لئے آپ کی توجہ اس طرف مبذول کر رہے ہںے۔
مںے اتنا بڑا تو نہں کہ پورے ملک اور پوری قوم کو مخاطب کروں لکنے مںو ان لوگوں کو ضرور مخاطب کرنا چاہوں گا جن کے بچہ مںں نے چلنا اور دوڑنا سکھاں۔ جن کی شفقت کا سایا ہمشہں مروے سر پر رہا۔جن کی ڈانٹ نے مجھے اس قابل بنا دیا کہ مںب کچھ آپ سے کہہ سکوں ہاں مرھے بھائی اگر آپ کا تعلق مرمے پاورے گاؤں "ٹوجنگا" سے ہے تو مںب آپ سے ہی مخاطب ہوں ۔ ہاں ہاں آپ سے ہی کہہ رہا ہوں کہ نام نمود کلئے افطار پارٹی کرنے سے اچھا ہے کہ آپ ان پسوںں سے کسی غریب کی مدد کردیں اللہ آپ کو اس سے کہںا زیادہ نوازے گا۔ آپ دیںھ اپنے آس پاس مںا کوئی گھر ایسا تو نہںں جہاں افطار اور سحری کا انتظام کرنا مشکل ہو؟ دیںھ کہ کہںآ کوئی بچہ اپنے والدین سے کسی اییں چزا کی ضد کر رہا ہو جو اسکے والدین اسے لکر نہ دے سکتے ہوں ؟ دیںھ کہں کوئی مجبور تو نہں جس گھر مںا چولہے نہ جلتے ہوں ؟ دیںھو ضرور کوونکہ اس کا یہاں نہںم تو کم سے کم اس مالک کے سامنے تو ضرور جواب دیناہوگا جس نے آپ کو نوازا ہے۔ باتںں لمبی ہوتی جا رہی ہے اور بے ترتبس بھی بس دل نے جو کہا وہ لکھ دیا اگر سمجھ مںو آجائںس اور اچھی لگی ہوں تو عمل کر لنا ورنہ اسے بھی ردی سمجھ کر دل کے کسی کونے مں پھنکے دینا۔ بس آخر مںس آپ کو رمضان مبارک کہتے ہوئے اپنی باتوں کو یں ر پر ختم کرتا ہوں اور دعا کرتا ہوں کہ اللہ آپ سب کو خوش رکھے آپ ہمشہ اپنے وطن مںم رمضان اور عدی کریں۔ آمنر ثم آمنر
٭ ساکن ٹوخنگا ، مقمہ حال سعودی عربہر ، فاؤنڈر و سی ای او اعظمی اسلامک زون

0 لائك

2 پسندیدہ

0 مزہ آگیا

0 كيا خوب

0 افسوس

0 غصہ

 
؞ ہم سے رابطہ کریں

تبصرہ / Comment
آپ کا نام
آپ کا تبصرہ
کود نقل کريں
؞   قارئین کے تبصرے
Commented on : 2018-06-14 12:34:31
محمدزاہد الاعظمی : بہت ساری ٹائپنگ کی غلطیاں ہیں خاص طور سے اسپیس کا مسئلہ کچھ زیادہ ہے

تازہ ترین
سیاست
تعلیم
گاؤں سماج
HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2018.