؞   حامد انصاری شبلی اکیڈمی کے صدر منتخب
۳۱ مارچ/۲۰۱۸ کو پوسٹ کیا گیا
اعظم گڑھ (حوصلہ نیوز) : دارالمصنفین شبلی اکیڈمی کی مجلس انتظامیہ نے متفقہ طور پر سابق نائب صدر جمہوریہ ہند اور مشہور مسلم اسکالر حامد انصاری کو اکیڈمی کا صدر منتخب کیا ہے۔ اس سے پہلے اکیڈمی کے صدر حیدرآباد کے نواب میر کرامت حسین تھے۔
حالیہ دنوں میں منعقد مجلس منتظمہ کی میٹنگ میں اکیڈمی کے ڈائریکٹر پروفیسر اشتیاق احمد ظلی نے اکیڈؐمی کے صدر کے لئے حامد انصاری کے نام کی تجویز پیش کی جسے میٹنگ میں موجود مجلس کے ارکان ڈاکٹر اے عبداللہ (واشنگٹن)، مولانا تقی الدین ندوی (جدہ)، ڈاکٹر سلیمان سلطان (گجرات)، ڈاکٹر خالد (دہلی)، ڈاکٹر ظفرالاسلام خان (دہلی) اورڈاکٹر فخرالاسلام اعظمی نے متفقہ طور پر منظور کرلیا۔ بعد میں اس تجویز کو حامد انصاری کی منظوری بھی حاصل ہوگئی۔
حامد انصاری ہندوستان کی سفارت کے فرائض انجام دینے کے ساتھ علی گڑھ مسلم یونیوسٹی کے وائس چانسلر اور اقلیتی کمیشن کی چئیرمین کے طور پر بھی اپنی خدمات انجام دے چکے ہیں۔ اگرچہ ان کا آبائی وطن غازی پور ہے لیکن آپ کی پیدائش و پرورش کلکتہ میں ہوئی۔ ایک سیاست دان کے ساتھ مسلم مسائل پر منطقی انداز میں اپنی رائے پیش کرنے والے اسکالر کے طور پر بھی حامد انصاری کو جانا جاتا ہے۔
واضح ہوکہ شبلی اکیڈمی کی مجلس منتظمہ میں 15 ارکان شامل ہیں جن میں موجودہ صدر حامد انصاری، ڈائریکٹر/سکریٹری پروفیسر اشتیاق احمد ظلی، مینیجر/ جوائنٹ سکریٹری ڈاکٹر فخرالاسلام اعظمی ہیں۔ جبکہ دیگر ممبران میں مولانا رابع حسنی ندوی، ڈاکٹر ظفرالاسلام خان، ڈاکٹر اے عبداللہ، مولانا تقی الدین ندوی، پروفیسر ظفرالاسلام، ڈاکٹر سلمان سلطان، پروفیسر ریاض الرحمان شیروانی، جناب موسی رضا، ڈاکٹر جاوید علی خان، مولانا سعیدالرحمان اعظمی، محمد امیر احمد اور پروفیسر خالد محمود شامل ہیں۔
1914 میں قائم شبلی اکیڈمی نے 2014 میں اپنا صد سالہ جشن منایا ہے۔ اس کے فعال ڈائریکٹر پروفیسر اشتیاق احمد ظلی اور ان کی ٹیم نے دارالمصنفین کو ازسرنو زندہ کرنے کا کام کیا ہے اور اس سے متعلق کتابوں میگزین وغیرہ کو آن لائن کرکے کافی اہم کام انجام دیا ہے۔


3 لائك

7 پسندیدہ

2 مزہ آگیا

3 كيا خوب

0 افسوس

0 غصہ


 
؞ ہم سے رابطہ کریں

تبصرہ / Comment
آپ کا نام
آپ کا تبصرہ
کود نقل کريں
؞   قارئین کے تبصرے
تازہ ترین
سیاست
تعلیم
گاؤں سماج
HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2018.