؞   انجان شہید میں ہے اورنگ زیب کے ہاتھوں لکھا سونے کا قرآن
۲۸ اگست/۲۰۱۷ کو پوسٹ کیا گیا
عظمت گڑھ (حوصلہ نیوز) : عظمت گڑھ وکاس کھنڈ میں واقع مشہور گاؤں انجان شہید تاریخی وراثتوں کو اپنے اندر سجوۓ ہوۓ ہے۔ یہاں مدرسہ دارالعلوم کے کتب خانہ میں سلطان اورنگ زیب کے ہاتھوں لکھا ہوا قرآن موجود ہے جو کہ کالی سیاہی سے لکھا ہوا ہے لیکن حروف کے بیچ میں خالی جگہ کو سونے کے پانی سے بھرا گیا ہے۔
دلچسپ بات یہ ہے کہ یہ قرآن ایک چور نے مدرسہ میں لا کر جمع کیا تھا۔ ہندی اخبار پتریکا کے مطابق اس قرآن کے بارے میں مدرسہ کے ناظم عبدالمنان چشتی بتاتے ہیں کہ لگ بھگ 57 سال پہلے کی بات ہے جب وہ اپنے والد رفیع خان کے ساتھ مدرسہ کے احاطہ میں بیٹھے تبھی 45 سالہ سانولے رنگ کا ایک شخص ان کے پاس آیا اور کہا کہ یہ شاید آُپ کی مذہبی کتاب ہے۔
میں ایک چور ہوں اور ایک سیٹھ کے یہاں چوری کے دوران مجھے ان کی تجوری میں یہ ملا تھا۔ مذہبی کتاب ہونے کی وجہ سے اس کے صفحات سے سونا نکالنا میں نے مناسب نہیں سمجھا۔ تب سے یہ قرآن مدرسہ کی لائبرییری میں موجود ہے۔ اس کے علاوہ مولانا آزاد کے ذریعہ نکالے جانے والے اخبار البلاغ اور الھلال کی کاپیاں میں یہاں موجود ہیں۔ مدرسہ کی لائبریری میں تقریبا 12 ہزار کتابیں موجود ہیں۔
انجان شہید کی وجہ تسمیہ : کہا جاتا ہے کہ 1857 کی جنگ آزادی کے دوران کسی مجاہد کی شہادت یہاں ہوگئی تھی لیکن وہ شہید ایک انجان آدمی تھے۔ ان کو وہیں دفنایا گیا اور اس جگہ کو انجان شہید کہا جانے لگا۔
اس کے علاوہ انجان شہید کا کالج، پوکھرہ اور قبر وغیرہ کافی اہمیت کی حامل رہی ہیں لیکن موجودہ وقت میں ان کا صحیح رکھ رکھاؤ اب نہیں ہو پارہا ہے۔

4 لائك

5 پسندیدہ

0 مزہ آگیا

0 كيا خوب

0 افسوس

0 غصہ

 
؞ ہم سے رابطہ کریں

تبصرہ / Comment
آپ کا نام
آپ کا تبصرہ
کود نقل کريں
؞   قارئین کے تبصرے
تازہ ترین
سیاست
تعلیم
گاؤں سماج
HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2017.