؞   علماء کونسل نے 10 اگست کو منایا مذہبی نا انصافی کا دن۔
۱۰ اگست/۲۰۱۷ کو پوسٹ کیا گیا
اعظم گڑھ/ دہلی (حوصلہ نیوز) دفعہ 341 سے مذہبی پابندی ہٹانے کی مانگ کو لے کر قومی علماء کونسل نے دہلی کے جنتر منتر سمیت ملک کے کئی صوبوں اور اضلاع میں احتجاجی مظاہرے کئے اور میمورنڈم دیا ۔
دہلی کے جنتر منتر پر علماء کونسل کے صدر مولانا عامر رشادي نے لوگوں سے خطاب کرتے ہوئے کہا کہ ہم تمام ملک میں تحریک کا آغاز کریں گے اور ہماری یہ تحریک اس وقت تک جاری رہے گی جب تک دفعہ 341 پر مذہبی پابندی کو ہٹا نہیں لیا جاتا۔
واضح رہے کہ 10 اگست 1950 میں آزاد ہندوستان کے پہلے وزیر اعظم جواہر لال نہرو نے دفعہ 341 میں مذہبی پابندی لگا کر دلت اور مسلم کو ریزرویشن سے محروم کر دیا تھا جس کے لئے علماء کونسل نے گذشتہ سالوں کی طرح امسال بھی 10 اگست کو ناانصافی دن کے طور پر منایا ہے۔
یہ مظاہرہ مدھیہ پردیش، مہاراشٹر، تمل ناڈو اور دہلی کے علاوہ اتر پردیش کے اعظم گڑھ، جونپور، علی گڑھ، بلیہ، الہ آباد، پرتاپ گڑھ، کانپور، گورکھپور، کشی نگر، دیوریا، مہراج گنج، بہرائچ، بلرام پور، مرادآباد، بجنور، لکھنؤ، بریلی، بنارس، غازی پور، بارہ بنکی، فیض آباد، امبیڈكرنگر اور اس کے علاوہ کئی اضلاع میں میں بھی ہوئے۔

7 لائك

2 پسندیدہ

0 مزہ آگیا

1 كيا خوب

0 افسوس

1 غصہ

 
؞ ہم سے رابطہ کریں

تبصرہ / Comment
آپ کا نام
آپ کا تبصرہ
کود نقل کريں
؞   قارئین کے تبصرے
تازہ ترین
سیاست
تعلیم
گاؤں سماج
HOME || ABOUT US || EDUCATION || CRIME || HUMAN RIGHTS || SOCIETY || DEVELOPMENT || GULF || RELIGION || SPORTS || LITERATURE || OTHER || HAUSLA TV
© HAUSLA.NET - 2017.